Connect with us

بلاگز

انگریزی تراجم قرآن میں خواتین کی خدمات —- مجتبیٰ فاروق

Published

on

مصنفانگریزی میں قرآن مجید کے تراجم و تفاسیر کا کام جہاں مردوں نے انجام دیا، وہیں خواتین بھی اس میں اپنا کردار ادا کررہی ہیں۔ دور حاضر میں خواتین نے قرآن مجید کے تراجم نگاری پر اچھا خاصا کام کیا ہے جس کو متعارف کرانے کی ضرورت ہے۔ اس تعلق سے انگریزی اور اردو میں خواتین نے سب سے زیادہ تراجم کا کام انجام دیا۔

انگریزی زبان میں پانچ سے زائد مکمل تراجم و تفاسیر موجود ہیں جو خواتین کے ذریعے سے ہوئیں۔ سب سے پہلے امریکہ کی ایک نومسلمہ ام محمد نے The Arabic Text with Corresponding English Meaning "کے عنوان سے قرآن کا ترجمہ کیا اوراس کی تفسیر لکھی ہے۔ یہ ترجمہ وتفسیر 1995ء میں صحیح انٹرنیشل کے تحت دار القاسم نے شائع کیا اور اب یہ Saheeh International کے نام سے شائع ہوتا ہے.اس ترجمہ قرآن میں انہیں امات اللہ جے بنٹلی اور ایک نومسلمہ میرے .ایم کینڈی نے بھی تعاون کیا۔

قرآن مجید کا دوسرا ترجمہ ایک اور نومسلمہ نے انجام دیا اور ان کا نام کیمائل اڈمس ہلمنسکی (Camile Adams Helminski) ہیں، ان کے ترجمے کانام Daily Readings fom the Holly Quran ہے۔

قرآن مجید کا ایک اور ترجمہ ایران کی طاہرہ سفارزادہ نے کیا اور ان کے ترجمے کا نام The Holly Quran : Translation with Commentary ہے۔

امریکی بیسڈ لیلیٰ بختیار نے بھی قرآن مجید کا ترجمہ کیا اور ان کے ترجمے کا نام The Sublime Quran ہے۔ یہ ترجمہ 2007ء میں شائع ہوا۔ لیکن یہ ترجمہ فکری لحاظ سے مغالطہ آمیز ہے اور اس میں بہت سے مقام پر مترجمہ نے غلطیاں کی ہیں۔ یہ ترجمہ تجددزدگی اور آزادی نسواں کا نمائندہ ترجمہ ہے۔

خواتین نے قرآن مجید کا ترجمہ و تفسیر مردوں کے ساتھ مل کر بھی کیا گیا ہے جس کو Rim Hassen نے Team work Translations کی اصطلاح استعمال کی۔ اس کی ایک مثال دینا الزہرہ زیدان کی ہے۔ انھوں نے اپنے شوہر کے ساتھ مل کر قرآن مجید کا ترجمہ کیا ہے اس ترجمے کا نام The Glorious Quran: Text and Translation ہے۔ Team work Translation کی ایک اور مثال سمیرہ احمد کی ہے انھوں نے اپنے شوہر کے ساتھ مل کر The Quran : Complete Dictionary and literal Translation کے عنوان سے کیا ہے۔ عبدالحق اورعائشہ بولی کا ترجمہ بھی اس کٹیگیری میں شامل ہے۔ عائشہ بولی نے اپنے شوہر حاج عبد الحق بولی سے مل کر قرآن کا ترجمہ کیا اور اس ترجمہ میں مختصر حواشے بھی شامل ہے۔ اس ترجمہ کا نام The Noble Quran: A New Rendering of its meaning in English ہے۔ یہ غیر مسلموں کو مد نظر رکھ کر کیاگیا اوراس کو ناروچ (Norwich ) بک ورک یو کے سے 1999ء میں شائع کیا گیا ہے۔

ایک اور ترجمہ قرآن ڈاکٹر شہناز شیخ صاحبہ کا ہے۔ جنھوں نے عرق ریزی سے قرآن مجید کا لغوی ترجمہ کیا جس کا نام The Glorious Quran: word -For-Word Translations رکھا ہے .یہ ترجمہ قرآن 2007ء میں اسلامی کتاب گھر پرنٹرس اینڈ ڈسٹری بیوٹرس دہلی نے شائع کیا .اس ترجمہ میں ان کی معاونت کوثر کھتری نے کی ہے.

انگریزی کے علاوہ خواتین نے دیگر زبانوں میں بھی قرآن کے تراجم کیں۔ اس سے اندازہ ہوتا ہے کہ برق رفتاری سے خواتین کے ذریعے سے قرآن مجید کے ترجمہ نگاری کا کام ہورہا ہے۔

Advertisement

Trending