انگلش پریمئیر لیگ کا آخری مرحلہ ۔۔۔۔ محسن حدید

0

انگلش پریمئیر لیگ اپنے آخری مرحلے میں داخل ہو چکی ہے اب آخری دو یا تین میچزباقی رہ گئے ہیں یہیں فیصلہ ہوگا کہ کون کپ اٹھائے گا اس سے بھی اہم مقابلہ چمپئینز لیگ میں شمولیت کی دوڑ کا ہے جس میں 4 ٹاپ ٹیمز شامل ہوں گی ٹاپ پر موجود چیلسیا ٹیبل کی نمبر دو ٹیم ٹوٹینہم ہاٹسپرز سے4 پوائنٹس کا فاصلہ ہنوز برقرار رکھے ہوئے ہے انٹونیو کونٹے جو کہ اٹلی کی نیشنل ٹیم کے بھی کوچ رہ چکے ہیں ان کا یہ پہلا انگلش پریمئیر لیگ سیزن ہے اور چیلسیا کو وہ خوب راس آئے ہیں2013 میں انہوں نے جووینٹس کے لئے بیسٹ گلوبل کوچ کا ایوارڈ بھی جیتا تھا ٹوٹینہم یہ فاصلہ سمیٹ سکتی تھی لیکن ٹیبل کے درمیانی نمبروں پر موجود ویسٹ ہام یونائٹڈ کے ہاتھوں غیر متوقع شکست نے ان کی امیدوں کو بہت بڑا دھچکا پہنچایا اب آئندہ تین میچز میں یہ فرق ختم کرنا بہت مشکل ہو جائے گا ویسے بھی چیلسیا کے ابھی چار میچز باقی ہیں دوسری طرف لیورپول جو کہ ٹائٹل کی دوڑ میں موجود تھی اسے گذشتہ تین میچز میں دوسری مرتبہ پریشانی کا سامنا کرنا پڑا جب انہیں ساوتھیمٹن کی ٹیم کے ساتھ ڈرا پر اکتفا کرنا پڑا اس سے پہلے لیورپول کو ٹیبل کے آخری نمبروں پر موجود کرسٹل پیلس کے ہاتھوں ناقابل یقین شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا تاہم اب بھی وہ پہلی چار ٹیموں میں شامل رہ سکتے ہیں فی الحال وہ تیسرے نمبر پر موجود ہیں
جوز مرینہو کی ٹیم مانچسٹر یونائیٹڈ ٹاپ فور میں شامل ہونے کا سنہری موقع گنوا بیٹھی ہے 25 میچز سے ناقابل شکست مانچسٹر یونائٹڈ کے لئے گذشتہ دو ہفتے بہت برے تھے اس اتوار کھیلے گئے میچ میں انہیں آرسینل سے 2-0 کی شکست ہوئی جہ کہ 25 میچز کے بعد ان کی پہلی شکست تھی اس کے علاہ مانچسٹر ڈربی میں انہیں سٹی کے ساتھ میچ برابر کھیلنا پڑا جبکہ حد تو یہ ہوگئی کہ سوانسی جیسے کلب کے خلاف بھی میچ برابر ہو گیا اس وقت ٹاپ فور کی تیسری اور چوتھی پوزیشن کے لئے لیورپول مانچسٹرسٹی مانچسٹر یونائٹڈ اور آرسینل کے درمیان مقابلہ جاری ہے آرسینل گو کہ 63 پوائنٹس کے ساتھ کافی پیچھے ہے لیکن ابھی بھی ان کے پاس 4 میچز باقی ہیں سو وہ دوڑ میں پوری طرح موجود ہیں مانچسٹر سٹی بہتر جارہی ہے گو لیگ جیتنے کا خواب اس بار بھی ادھورا رہے گا لیکن پیپ گورڈیلا کا پہلا سیزن ہے اور وہ اس بات پر کافی خوش ہوں گے کہ ان کی ٹیم چمپئینز لیگ کے لئے کوالیفائی کرجائے گزرے ایک مہینے میں ٹیم ان کی توقعات کے عین مطابق کھیلی ہے گورڈیلا بارسلونا کے لئے کلب ورلڈکپ بھی جیت چکے ہیں جبکہ بائرن میونخ جیسے کلب کے مینیجر بھی رہ چکے ہیں
سب سے زبردست کارکردگی کا مظاہرہ گذشتہ سال کی چمپئین لیسٹڑ سٹی کی طرف سے ہوا ہے لیسٹر کبھی بھی بڑی ٹیم نہیں رہی مسلسل شکستوں کی وجہ سے جادوئی کوچ کلاڈیو رانیری کی ایک سال میں ہی چھٹی ہو گئی تھی اورانہیں درمیان سیزن ہی ٹیم انتظامیہ نے برطرف کردیا تھا ان کی جگہ لینے والے کریگ شیکسپئیر جیسے کلب کی لئے خوشیوں کا پیغام لے کر آئے ہیں شیکسپئیر کا بھی یہ پہلا سیزن ہے لیکن ان کی کوچنگ میں ٹیم نے 10 میں سے 7 میچز جیت لئے ہیں ایک دفعہ توٹیبل پر پندرہویں نمبر پر چلی جانے والی ٹیم کے لئے یہ بہت شاندار کارکردگی ہے لیسٹر سٹی ٹاپ 10 میں واپس آچکی ہے اور ان کے مداحوں کے لئے یہ کافی فخریہ نتیجہ ہے مڈلسبرگ اور سندرلینڈ کی تنزلی اب طے ہے تاہم تنزلی کا شکار ہونے والی تیسری ٹیم کا فیصلہ اب کافی دلچسپ ہو چکا ہے سوانسی جو کہ 18 ویں نمبر پر موجود تھی گذرے دو ہفتوں میں انہوں نے اپنے لئے بچت کا سامان پیدا کر لیا ہے پہلے سٹوک سٹی کے خلاف فتح پھر مانچسٹر یونائٹڈ جیسے مضبوط حریف کے خلاف میچ برابر کھیل جانا اور اس ہفتے کی شام ایورٹن جیسی بڑی ٹیم کو 1-0 سے شکست دے کر انہوں نے اپنی قابلیت کے کچھ جوہر دکھائے ہیں مگر اب باقی دو میچزمیں بھی اچھی کارکردگی انہیں دکھانا ہوگی کیونکہ سوانسی ہل سٹی اور کرسٹل پیلس کے درمیان پوائنٹس کا فرق بہت معمولی ہے سو یہ کہا جاسکتا ہے کہ اس وقت ٹاپ کی دو پوزیشنز اور باٹم کی دونوں پوزیشنز پر ٹیمز کا تقریبا فیصلہ ہوچکا ہے لیکن ٹاپ فور کی باقی دو اور تنزلی کا شکار ہونے والی آخری ٹیم کا فیصلہ بہت مشکل ثابت ہو رہا ہے ٹیمز اپنے کھیل کو اٹھا رہی ہیں اور کسی بھی قسم کی پیشین گوئی کرنا کافی مشکل ہے

About Author

Daanish webdesk.

Leave a Reply

Leave A Reply

%d bloggers like this: