سوشل میڈیا بند کرنا پڑا تو کریں گے، چوہدری نثار کے بیان پر تبصرہ

0
 چوہدری نثار نے گستاخانہ مواد کی روک تھام کے لیے اپنے جینیس سے جو نکتہ نکالا ہے اس کی داد نہ دینا زیادتی ہوگی۔ فرمایا کہ اگر ہمیں پورا سوشل میڈیا بند کرنا پڑا تو کر دیں گے۔ 
ایسے بے وقوفانہ بیان پر مہذب دنیا میں وزیر کو بند کر دیا جاتا ہے۔ بلکہ سیاست سے باہر کر دیا جاتا ہے۔ مگر ہمارے پاس سب چلتا ہے۔
دنیا کلاسیک مثالوں سے بھری پڑی ہے۔ ریچھ کی کہانی یاد ہوگی آپ کو۔ ایک آدمی نے ریچھ سے دوستی کرلی۔ ریچھ اس سے بہت محبت کرتا تھا۔ ایک دن وہ آدمی سو رہا تھا کہ ایک مکھی اسکی ناک پر آکر بیٹھ گئی۔ ریچھ کو لگا کہ وہ مکھی اس کے دوست و آقا کو بہت تنگ کر رہی ہے۔ اس نے فوراً ایک بڑا سا پتھر اٹھایا اور اس مکھی پر دے مارا۔ آدمی کا سر پاش پاش ہو گیا۔ نتیجہ، بیوقوف کی دوستی سے بچو، اسکی محبت بھی آپکو نقصان دے سکتی ہے۔
ہمارے ہاں ایسی ریچھ جیسی عقل رکھنے والوں کو ملک چلانے کے لیے چن لیا جاتا ہے۔ جو مکھی کے ساتھ بندہ بھی مار دینے کا حل ہی سوچ سکتے ہیں۔
یوٹیوب پر ایک ویڈیو کی وجہ سے یوٹیوب بند کر دو۔ ۔ ۔ فیس بک پر ایک پیج کی وجہ سے سارا سوشل میڈیا بند کر دو۔ ۔ ۔
میرا خیال ہے وزیر داخلہ نے کوئی انوکھا بیان جاری نہیں کیا۔ وہ یہی کر سکنے کی صلاحیت رکھتے ہیں، انکو یہی کہنا چاہیے تھا۔ سوشل میڈیا بند بھی ہو جائے گا، اور کوئی قیامت بھی نہیں آئے گی، آخر عوام نے سالوں تک یوٹیوب کے بغیر بھی تو گذار ہی لی۔ جس ملک کے عوام اکیسویں صدی میں بجلی، پانی، سڑک، تعلیم جیسی بنیادی چیزوں کے بغیر بھی زندگی گذار رہے ہوں، ان سے آپ سوشل میڈیا جیسی چیز کے چھن جانے پر کسی ردعمل کی امید کیسے کر سکتے ہیں۔
 

About Author

محمودفیاض بلاگر اور ناول نگار ہیں۔ انکے موضوعات محبت ، زندگی اور نوجوانوں کے مسائل کا احاطہ کرتے ہیں۔ آجکل ایک ناول اور نوجوانوں کے لیے ایک کتاب پر کام کر رہے ہیں۔ اپنی تحریروں میں میں محبت، اعتدال، اور تفکر کی تبلیغ کرتے ہیں۔

Leave a Reply

Leave A Reply

%d bloggers like this: