بیروزگاری کا حل: ایک سنجیدہ تحریر —- علی حسنی

0

آپ مزدور ہوں یا افسر، نوکری کرتے ہوں یا کاروبار، فراغت (بیروزگاری) کے دن بھی آتے ہیں۔ ۔ ۔ اور سب کو ہی آتے ہیں۔ کچھ تو اس چکر سے جلدی نکل جاتے ہیں لیکن۔ ۔ ۔ اکثر دوست و احباب۔ ۔ ۔ اس پریشانی کے وقت۔ ۔ ۔ میں ہمیشہ کے لئے الجھ کر رہ جاتے۔ جانتے ہیں کیوں ؟۔ ۔ ۔ ۔ ۔ سستی، کاہلی اور انجانے کا خوف۔

اس موضوع پر تفصیلی گفتگو کی ضرورت ہے۔ اور اس کے خاتمے کے لئے کوئی ایک طریقہ۔ ۔ ۔ ۔ ون یونیورسل سلیوشن۔ ۔ ۔ کارگر نہیں۔ ہر شخص کے حالات و معاملات اور تعلیم کو دیکھتے ہوئے الگ مشورے کے ضرورت ہے۔ اس لئے، اگر آپ بے روزگار ہیں تو اپنے شعبے کے ماہرین سے مشوری لیجئے اور اس وقت کے خاتمے کے لئے دوا اور دعا۔ ۔ ۔ دونوں سے مدد لیجئے۔ یہی بہتر ہے۔

اگر آپ اس پریشانی کا شکار نہیں تو۔ ۔ ۔ ۔ اللہ سے دعا کئجئے کہ۔ ۔ ۔ آپ کو اس سے بچائے رکھے۔ ۔ ۔ لیکن ساتھ ہی اس کے لئے تیار بھی رہئے۔ کہ برا وقت۔ ۔ ۔ ۔ اعلان کر کے نہیں آتا۔ ۔ ۔ ۔ آج نوکری بہت اچھی چل رہی ہے، لیکن کل ایک دم سے نوٹس آ سکتا ہے۔ اور یہ خطرہ ان لوگوں کو زیادہ ہے۔ ۔ ۔ جو اپنے کام میں کامیاب ہوتے ہوئے۔ ۔ ۔ ۔ ترقی کرتے ہوئے۔ ۔ ۔ ۔ اوپر آگئے ہیں۔ ۔ ۔

بات بلکل واضح ہے
آپ جتنا اوپر جاتے رہتے ہیں۔ ۔ ۔
نیچے آنے کا خطرہ۔ ۔ ۔ اتنا ہی زیادہ ہوتا ہے۔

اس وقت۔ ۔ ۔ ۔ بیروزگاری۔ ۔ ۔ کی وجوہات طے کرنا مقصود نہیں۔ ۔ ۔ بس کچھ بنیادی مشورے ہیں۔ ۔ ۔ کہ جو دوست و احباب۔ اس وقت۔ ۔ ۔ ۔ بے روزگاری۔ ۔ ۔ ۔ کے وقت سے گزر رہے ہیں۔ ۔ ۔ ۔ وہ کیا کریں اور کیا نہ کریں۔ ۔ ۔ ۔ اور اس پریشانی میں کس طرح اپنے آپ کو مصروف رکھیں۔ ۔ ۔ روزگار کی تلاش جاری رکھیں۔

1. کام : دیکھئے صاحب۔ ۔ ۔ آپ کے پاس کام ہے۔ ۔ ۔ ۔ پہلے آپ کسی کے لئے کام کرتے تھے۔ ۔ ۔ جو آپ کو تنخواہ دیتا تھا۔ ۔ ۔ وہ کام آپ کے پاس نہیں۔ لیکن آپ کے پاس آج بھی ایک کام ہے۔ اور یہ کام۔ ۔ ۔ آپ کے پچھلے کام سے بہت زیادہ اہم ہے۔ ۔ ۔ ۔ آج آپ کے پاس کام ہے۔ ۔ ۔ ۔ ” نوکری کی تلاش ” کا کام۔ اگر آپ یہ کام سنجیدگی سے نہیں کریں گے۔ ۔ ۔ تو یہ کام کبھی ختم نہ ہوگا۔

کام کی تلاش: اس فہرست میں سب سے اہم یہی بات ہے کہ۔ ۔ ۔ ۔ آپ سالوں پڑھتے ہیں۔ ۔ ۔ اور پھر کسی کام میں مہارت حاصل کرتے ہیں۔ ۔ ۔ لیکن مدرسوں میں اور نہ ہی کالجوں اور یونیورسٹیز میں۔ ۔ ۔ ۔ ” کام کی تلاش” کیسے کریں، کہاں کریں۔ ۔ ۔ ۔ سکھایا ہی نہیں جاتا۔ سب سے پہلے۔ ۔ ۔ ۔ یہ سیکھیں کہ ” کام کی تلاش ” کیسے کریں۔ چند دوستوں اور رشتہ داروں کے سامنے بے بسی سے ” کوئی نوکری ہو تو بتاؤ ” سے کام نہیں چلے گا۔ آپ کو ” ” کام کی تلاش” کو سنجیدگی سے پڑھنے اور سمجنے کی ضرورت ہے۔ اس کے لئے اپنے مخصوس شعبے اور ہیومن ریسورس سے وابستہ لوگوں سے ملیں، سمجیں اور اپنے لئے مناست ترین راستہ منتخب کریں۔

شیڈول: بیروزگار ہوتے ہی، آپ کا شیڈول۔ ۔ ۔ تبدیل ہوجاتا ہے۔ پہلے آپ کے پاس وقت کی کمی ہوتئ ہے۔ ۔ ۔ اب وقت ہی وقت۔ پہلے آرام کرنے کے لئے وقت نہ ملتا تھا۔ ۔ ۔ مگر اب وقت ہی قوت۔ شروع میں چند دن ضرور آرام کریں۔ لیکن۔ ۔ ۔ اس کی عادت نہ ڈالیں۔ ۔ ۔ آپ کے اٹھنے، تیار ہونے، گھر سے نکلنے اور واپس آنے کا ایک وقت ہونا چاہئے۔ یوں بے وجہ۔ ۔ ۔ بستر پر پڑے رہنے سے۔ ۔ ۔ نہ صرف آپ بیمار پڑ جائیں گے۔ ۔ ۔ بلکہ۔ ۔ ۔ ۔ کھر والوں کے لئے بھی پریشانی کا باعث ہونگے۔ آپ کی ہر وقت گھر میں موجودگی۔ ۔ ۔ آپ کے گھر والوں کو ہر وقت یاد دلاتی رہے گی۔ ۔ ۔ کہ اپ کے پاس کوئی کام نہیں۔ ۔ ۔ ۔ اور آپ پریشان ہیں۔ ۔ ۔ ۔

دوسروں کی مدد کریں: لوگوں کی مدد صرف سرمائے سے ہی نہیں۔ ۔ ۔ ۔ وقت سے بھی ہوتی ہے۔ کل آپ ایک اہم عہدے پر تھے۔ ۔ ۔ آپ کے پاس وقت نہیں تھا۔ لیکن آج آپ کے پاس وقت ہے، اور پریشانی بھی۔ آج آپ لوگوں کی پریشانی کو بہتر سمجھ سکتے ہیں۔ ۔ ۔ اپنے اردگرد لوگوں کو وقت دیں۔ ۔ ۔ ان کے مسائل سنیں۔ ۔ ۔ انھیں حل کرنے کے لئے جو کر سکتے ہیں کریں۔ ۔ ۔ لوگوں سے ملاقت کریں۔ ۔ ۔ کوئی این جی او جوائن کر لیں۔ ۔ ۔ مفاد عامہ سے متعلق کسی بھی کام کو شروع کریں۔ ۔ ۔ اگر آپ مذہی رجحان کے حامل ہیں تو پانچ وقت مسجد میں نمان پڑھنے کی عادت ڈالیں۔ ۔ ۔ ۔ تبلیغی جماعت میں چلے پر چلے چائیں۔ ۔ ۔ اس سب سے آپ کا لوگوں سے ملنا جلنا بڑھے گا اور نوکری ملنے کے امکانات بھی۔

جو کام ملے۔ ۔ ۔ کریں: جب تک کوئی مستقل اور آپ کے معیار کے مطابق کام یا نوکری نہیں ملتی، فارغ نہ بیٹھیں۔ ۔ ۔ ۔ جو کام ملتا ہے۔ ۔ ۔ کریں۔ اپنے کسی دوست کے آفس چلے جئیں۔ ۔ ۔ دوست کے کام میں اس کی مدد کریں۔ ۔ ۔ بس فارغ نہیں نہ بیٹھیں۔ ۔ ۔ ۔ آن لائن کام کریں۔ ۔ ۔ ۔ چھوٹے چھوٹے۔ ۔ ۔ ۔ پروجیکٹ لیں۔ ۔ ۔ اپنی استعداد کو بڑھائیں۔ ۔ ۔ اور اپنے شعبے سے متعلق۔ ۔ ۔ کتابیں، میگزین اور اہم لوگوں کے متعلق لوگوں کو فالو کریں۔ ۔ ۔ ۔ اپنے شعبے سے متعلق انجمنوں کے مختلف پروگراموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔ ۔ ۔

5. ورزش: بیروزگاری کا دورانیہ جتنا طویل ہوتا جاتا ہے، اس کے صحت پر پڑنے والے اثرات اور نتیجے میں پیدا ہونے والے جسمانی مسائل کا امکان بھی بڑھتا رہتا ہے۔ ویسے تو آپ کو اپنی زندگی میں۔ ۔ ۔ ۔ ورزش – ایکسرسائز۔ ۔ ۔ ۔ کے لئے ہمیشہ ہی وقت نکالنا چاہئے۔ ۔ ۔ لیکن بے روزگاری کے دوران تو۔ ۔ ۔ اس کی بہت ہی زیادہ ضرورت رہتی ہے۔ کسی مناسب جگہ پر آپ کی یہ ورزش۔ ۔ ۔ نہ صرف آپ ایک صحت مند ماحول دیتی ہے۔ ۔ ۔ آپ کو تندرست رکھتی ہے۔ ۔ ۔ آپ کا موڈ بحال رکھتی ہے۔ ۔ ۔ بلکہ۔ ۔ ۔ ۔ آپ کی نوکری کی تلاش میں بھی کارگر ہوتی ہے۔

7. اپنی مہارت میں اضافہ و تبدیلی: اس بات کا قوی امکان ہے کہ۔ ۔ ۔ ۔ آپ کی نوکری سے فراغت میں آپ کے شعبے میں ہونے والی تبدیلیوں کا بھی ہاتھ ہو۔ سائنس اور ایجادات کی فراونی نے ہمارے لئے نوکری کا میدان مشکل کردیا ہے۔ اب ہم کو اپنے کام کو مستقل بدلتے رہنے کی ضرورت ہے۔ اور اگر ہم ایسا نہیں کریں گے تو ہماری نوکری کی تلاش مشکل سے مشکل تر ہوتی جائے گی۔

موضوع بہت اہم اور تفصیل طلب ہے۔ میرے بھائیوں اور عزیز دوستوں میں بھی کئی دوست ایسے ہیں۔ ۔ ۔ ۔ جو اس دور سے گزر رہے ہیں۔ ۔ ۔ ۔ بیروزگاری میں نہ تو کچھ دل چاہتا ہے۔ ۔ ۔ ۔ ۔ اور نہ ہی ذہن کام کرتا ہے۔ ۔ ۔ ۔ اپنے اردگرد۔ ۔ ۔ سب فضول و بے معنیٰ لگنے لگتا ہے۔ ۔ ۔ ۔ ایسے میں ضرورت ہے اس بات کی۔ ۔ ۔ کہ۔ ۔ ۔ بے ورزگار شخص کے اردگرد موجود لوگ۔ ۔ ۔ ۔ اس کی ہمت بندھائیں۔ ۔ ۔ ۔ اور اس کا حوصلہ برقرار رکھیں۔ ۔ ۔ ۔

(Visited 1 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Leave A Reply

%d bloggers like this: