قلم اور کالم ——– تبصرہ ببرک کارمل جمالی

0

دوستو میری ہاتھ میں تازہ ترین شائع ہونے والی کتاب “قلم اور کالم” ہے۔ اس کتاب کی خوبصورت بائینڈنگ اور سرورق ہے یہ کتاب میرے پیارے دوست ڈاکٹر چودھری تنویر سرور صاحب کی ہے ڈاکٹرچوہدری تنویر سرور سے میری پہلی اور اب تک کی آخری ملاقات لاہور میں ایک ادبی نشست کے دوران ہوئی ہیں، اگرچہ سوشل میڈیا پر تعلق ایک عرصہ سے قائم تھا اس کتاب میں انہوں نے کالم کیسے لکھا جائے پہ نئے لکھنے والوں کی کافی مدد کی ہے۔ اس وقت ہمارے ملک میں صحافت ریاست کا بنیادی اور چوتھا ستون ہے۔ نامور صحافی و کالم نگار محترم جناب ڈاکٹر چوہدری تنویر سرور اپنی کتاب قلم اور کالم میں لکھتے ہیں کہ کالم لکھنا کوئی آسان کام نہیں ہے کالم لکھنے کے لیے کچھ نہ کچھ پڑھنا پڑتا ہے پھر جاکر انسان کچھ لکھنے کے قابل ہوتا ہے۔

آج کل سوشل میڈیا الیکٹرونک میڈیا اور پرنٹ میڈیا میں کالم لکھنے والوں کی تعداد آئے دن بڑھتی جا رہی ہے سوشل میڈیا، الیکٹرانک میڈیا اور پرنٹ میڈیا سے وابستہ بہت افراد روز کالم لکھتے ہیں اور مسلسل لکھتے چلے آ رہے ہیں مگر معلومات کم ہونے کی وجہ سے بہت سے کالم نگار روبہ زوال بھی ہوتے جا رہے ہیں جس کی وجہ کتابوں سے دوری ہے۔ مگر یہ کتاب انہیں بہت سارے سبق دے گی۔ میں نے صحافت کے حوالے سے بہت سے دوستوں کی کئی کتب دیکھیں ہیں بہت سے نام دیکھے ہیں مگر قلم اور کالم یہ ایسا نام ہے جو ہمیشہ یاد کیا جائے گا سب سے زیادہ خاص بات اس کتاب کی بات ہے کہ ہمارا کالم اخبارات میں شائع کیوں نہیں ہوتا اس کے ساتھ ساتھ انہیں اس بات کا بھی علم ہوگا کہ کالم کو کن کن مراحل سے گزرنا پڑتا ہے، کالم نگار کی کیا کیا خوبیاں ہے، کالم نگار کو کن خامیوں سے بچنا چاہیے، کالم نگار عوام کے لیے ایک آئیڈیل ہوتا ہے، کالم نگار کی باتیں پڑھ کر انسان اپنے اندر تبدیلی لانے کی کوشش کرتا ہے۔

اس کتاب میں ڈاکٹر چودھری تنویر سرور صاحب کالموں کہ علاوہ کالم لکھنے سے لیکر کالم شائع ہونے تک کی تمام معلومات کے بارے میں لکھتے ہیں جو نوجوان صحافت اور کالم لکھنے کے شوقین ہیں وہ اس کتاب سے بھر پور فائدہ اٹھا سکتے ہیں ہمیشہ کالم لکھتے وقت انسان کے ذہن میں جب مختلف خیالات نے جنم لیا تو انسان نے سوچا کہ کیوں نہ ان خیالات کو آنے والی نسلوں کے لئے محفوظ کر لیا جائے، اس انسان نے اپنے خیالات کو محفوظ کرنے اور اپنے تجربات سے دوسرے لوگوں کے اشتراک کی خاطر اپنے خیالات و تجربات کو کتابی شکل میں لایا تاکہ رہتی دنیا تک ہر شخص کی معلومات میں اضافہ ہوتا جائے۔ قلم اور کالم کے مصنف ڈاکٹر چوہدری تنویر سرور لکھتے ہیں کالم لکھنا اتنا آسان بھی نہیں اس کے لیے کالم نگار کا تعلیم یافتہ ہونا نہایت ضروری ہے۔ ایک بات یاد رکھیں کہ ایک کالم نویس عام تعلیم یافتہ انسان سے مختلف ہوتا ہے کیونکہ اس میں ایسے اوصاف پائے جاتے ہیں جس کی وجہ سے وہ ایک اچھا کالم نویس کہلاتا ہے اور وہ اپنے تجربہ اور اوصاف کی وجہ سے قارئین کے لئے معیاری اور مقبول کالم لکھتا ہے آج کے اس ترقی یافتہ دور میں کالم نگاروں کی کمی ہرگز نہیں ہے اخبارات کم ہیں ایڈوٹیریل پیج کیلئے لکھنے والے بہت زیادہ ہیں۔

ڈاکٹر چوہدری تنویر سرور کی کتاب قلم اور کالم میں محترم شامی صاحب کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر چوہدری تنویر سرور کا شوق انہیں مسلمہ کالم نگار بنا سکتا ہے، میری دعا ہے کہ وہ اس میدان میں اپنا سفر جاری رکھیں اور اس کے لوازمات کو کبھی نظر انداز نہ ہونے دیں، میں امید کرتا ہوں ڈاکٹر چوہدری تنویر سرور جس لگن، جستجو، محنت، مشقت اور جدوجہد کے بعد اپنی چھٹی کتاب پاکستانی عوام کو پڑھنے کے لئے مہیا کی ہے آئندہ بھی اسی طرح لکھیں گے اورمسلسل لکھیں گے۔ میری دلی دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ ڈاکٹرچوہدری تنویر سرور کی کتاب ’’قلم اورکالم ‘‘کو بھی ادبی حلقوں میں نمایاں مقام عطا فرمائے۔ کتاب کی قیمت صرف 300 روپے ہے۔

Leave a Reply

Leave A Reply

%d bloggers like this: