’دس مرچیاں‘ ۔۔۔۔۔۔۔۔ شفیق زادہ

1
  • 57
    Shares

خبر: ایوانکا سلامتی کونسل میں ڈاینامائٹ ثابت ہوں گی
مرچی: یہی تو ہم کب سے کہہ رہے ہیں کہ سسری ‘بم ‘ ہے۔ نیکی ہیلی کے جانے کے بعد ایوانکا سے زیادہ آتش گیر بھلا اور کون ہوگا۔ اس شعلہ صفت نے پہلے ہی پناہ گزینوں سے ان کے بچے چھیننے کی مہم شروع کر رکھی ہے۔ سٹھیائے سٹھیائے ٹرمپ کو پمپ رکھنے کے لیے ایسی ہی دھماکہ خیز مواد کی ضرورت تھی جو بہ خوبی پوری ہو رہی ہے۔

خبر: چیئرمین سینیٹ نے فواد چوہدری اور مشاہد اللہ میں صلح کروا دی
مرچی: سارا خاندان پی آئی اے میں بھرتی کرا کے ادارے کا بیڑہ غرق کر دیا (فواد چوہدری)۔ اپنے علاج پر 54 ہزار پونڈ لگوا دئیے (فواد چوہدری)۔ یہ منحوس ہے، فراڈ ہے ( مشاہد اللہ خان) میرے بھائی کے خلاف لندن میں انتقامی کاروائی شروع کر دی گئی (مشاہد اللہ خان)۔ آج بلوچ جرگہ کام آگیا (چیئرمین سینیٹ) ۔ مذاکرات کامیاب منحوس فراڈیے اور ایک ڈاکو لٹیرے  قربا پرور میں صلح ہو گئی، ایوان میں واپسی، ممبران کا ڈیسک بجا کر خیر مقدم۔ عوام کا کولہے مٹکا مٹکا کر بھائی چارے اور مفاہمت کو خراج تحسین، باقی جو بچا اس کی ایسی کی تیسی۔ یو یو ہنی سنگر!!

خبر: وزیر اعلیٰ پنجاب کا عالمی یوم ذہنی صحت پر پیغام
مرچی: اس دن کے مناسبت سے ان سے بہتر پیغام رساں ڈھونڈنا مشکل تھا۔ ابھی کل ہی بابا رحمتے سے ڈانٹ پڑی ہے اور آج ہی ہوش ٹھکانے آگئے کہ ’یوم صحت‘ پر پیغام چھوڑ دیا۔ پیغام میں کہا گیا ہے ’دماغ جسم کا اہم ترین جزو ہے‘۔ اہل پنجاب اس جانکاری دینے پر داد و تحسین کے ڈونگرے برسا رہے ہیں۔ اور راوی وہ تو اب صرف چین چین ہی لکھتا ہے، پاک چین دوستی زندہ باد۔

خبر: اسٹیٹ بینک نے رپے کی قدر میں کمی پرپالیسی بیان جاری کر دیا
مرچی: اسٹیٹ بینک صاحب فرماتے ہیں کہ بزرگوار ’ناخوشگوار اتار چڑھائو کی صورت میں مداخلت کے لیے تیار ہے‘۔ بیان میں مزید فرماتے ہیں کہ ’صورت حال کی مسلسل کڑی نگرانی جاری رہے گی‘۔ اب یہ مالی چوکیدار کس چکر میں ہے اور کس کے چڑھنے اور اترنے کی نگرانی کر رہے ہیں، پتہ نہیں کیوں کہ عوام تو چلّا چلاّ کر کہہ رہے ہیں

خاک ہو جائیں گے ہم تم کو خبر ہونے تک

خبر: حالات بہت خراب ہیں اور مہنگائی سے لوگ پریشان ہیں (چیف جسٹس پی کے)
مرچی: واہ واہ واہ، مکرّر ارشاد۔ کیا دانشمنداندانہ بات کہی، بہت عمدہ۔ بھئی دل خوش ہو گیا، یقین مانیے جناب جج صاحب کا یہ ریمارک سن کر سیروں خون بڑھ گیا۔ ایک عجیب سے جولانی طولانی اورلن ترانی محسوس ہو رہی ہے۔ بھئ کوزے کو دریا میں بند کرنے کا فن کسی نے سیکھنا ہے تو سیکھ لے، روز روز ایسے گوہر نایاب کہاں جھڑتے ہیں۔ ہمارا خیال ہے اتنی واہ واہ، جے جے ہا ہا کار ’کنٹوپ آف کورٹ‘ سے پتلی گلی پکڑنے کے لیے کافی ہے۔

خبر: کینیڈا میں غائب ہونے والی ائیر ہوسٹس کا سراغ مل گیا
مرچی: بیچاری بچی! اچھے مستقبل کے چکر میں بری حرکت کر بیٹھی۔ اگر کوئی ایسا ویسا کام کرنا ہی تھا تو عیان علی سے ہی کوئی سبق کوئی کوچنگ لے لیتی۔ صفائی سے نکل بھی جاتی اور کسی کے کان میں جوں بھی نہ رینگتی۔ اب تم چونکہ عوام الناس سے ہو تو ہر فرض شناس خوابیدہ افسر کے کانوں میں جوں کے بجائے خر شریف رینکنا شروع کر دیں گے۔

خبر: جعلی ڈگریوں پر دو وکلاء کی بار کونسل رکنیت منسوخ
مرچی: جعلی وکیل بھی سوا لاکھ کا ہوتا ہے، اسی لیے بار کونسل نے رکنیت منسوخ کرنے کی کڑی سزا دی تا کہ اشرافیہ وکلا کے مزاج نازک پر گراں نہ گذرے۔ اگر ہما شما ایسی کوئی حرکت کرتا تو جعلسازی کا چھوٹا موٹا کیس تو بنتا ہی ہے نا؟ ویسے بھی اگر کیس بنتا بھی تو کسی عدالت میں ہی جاتا نا اور پھر وکیلوں کی دھما چوکڑیاں اور کمرہ عدالت میں دما دم مست قلندر، اس سے بہتر ہے بس رہنے ہی دو، عزت بھی رہ جائے گی اور انصاف بھی بچ جائے گا۔

خبر: ملک میں اقتصادی کے ساتھ جمہوری بحران بھی ہے (سینیٹر شیری رحمان)
مرچی: محترمہ آپ کی حکومتوں میں تو ان دو بحرانوں کے ساتھ ایک اور بھی ہوا کرتا ہے جسے’ اخلاقی بحران‘ کہتے ہیں۔ تھر کے قحط زدہ باسی اور بھوک سے دم توڑتے بچے کبھی خواب میں آکر سوال کرتے ہیں کہ نہیں؟۔ کارو کاری کے شکار مقتول، خاندانی غلام ہاری، نجی جیلیں اور ترقیاتی فنڈ کے کھربوں روپوں کی دھکم پیلی ، نیند کیسے آتی ہے؟

خبر: ڈونکی کنگ اپنی نوعیت کی بہترین کاوش ہے (فواد چوہدری)
مرچی: جی بس کوشش تو بہت کی ہے کہ امیدوں کو پورا کرے، سینیٹ میں روز اس کا ٹریلر بھی دیکھ رہے ہیں، دیکھنا یہ ہے کہ باکس آفس پر کتنے دن اور کیسا پرفارم کرتی ہے۔ پنجاب حکومت نے تو ’پخ‘ کو وقت سے پہلے ہی ملٹی پلیکس سے اتار کر بلبل ٹاکیز میں لگا دیا ہے۔ اب روپے کی ساری امیدیں بہ قول آپ کے ’ ڈونکی کنگ ‘سے ہی وابستہ ہیں۔ ویسے بھی قوم کو ڈونکی ڈونٹس اچھے لگتے ہیں، ڈونگی کنگ بھی پسند آئے ہی جائے گی۔ اس کا سیکوئل بھی بنے گا کہ نہیں بہ نام ’ڈونکی کوئن۔ ’اسٹوری آف اے سروائیوور‘۔

خبر: انٹرنیٹ استعمال کرنے میں امریکی سب سے آگے (سروے)
مرچی: انٹر نیٹ میں ’کام‘ کی چیز ڈھونڈنے، دیکھنے اور ڈاؤن لوڈ کرنے میں سب سے آگے کون؟ بوجھو تو جانیں۔ اس کام کی چیز کی ڈھنڈائی اور بصارت کی ٹھنڈائی میں برادران پی کے اوّل نمبر ہیں۔ آخر قصور کی بے قصور بچیاں یونہی تو پامال نہیں ہوتی رہیں۔ امریکی انٹرنیٹ استعمال کرنے میں سب سے آگے ہوں گے مگر ہمارا مقابلہ نہیں کر سکتے کیونکہ ہم پیچھے رہ کر بھی ان کے آگے ہیں۔

About Author

Leave a Reply

1 تبصرہ

Leave A Reply

%d bloggers like this: