ارون دھتی رائے اور مظلوم کشمیریوں کی ڈکشنری : اطہر وقار عظیم

0
  • 25
    Shares

بھارت میں بہت کم دانشور ایسے رہ گئے ہیں، جو اپنی حکومت کے جابرانہ استبدادکے سامنے سچ اور حق بات کرنے کی جرأت رکھتے ہوں۔ اس باب میں بھارتی مردوں کی تعداد پہلے ہی آٹے میں نمک کے برابر ہے، کجا یہ کہ ہم یہ امید کریں، بھارت میں ایسی خواتین موجود ہوں، جو نڈر انداز میں،ناصرف حق بات لوگوں کے سامنے لاسکیں بلکہ پھر اس پر ڈٹ بھی جا ئیں۔ لیکن بھارت میں ابھی بھی ایک دلیر نڈر، بہادر دانشور، مصنفہ موجود ہے، جس نے مقبوضہ کشمیر، بھارتی مسلمانوں، اور نچلی ذات کے ہندووں پر ڈھائے جانے والے مظالم کے حوالے سے، ہمیشہ حق اور سچ بیان کیا ہے۔ اور اسی سچ اورحق کو بیان کرنے کی پاداش میں انہیں، کیٔ بار غداری کے مقدمات کابھی سامنا کرنا پڑا ہے۔ لیکن کمال ہے کہ، لوہے کے اعصاب والی یہ خاتون، اپنے مٔوقف سے بال برابر بھی پیچھے نہیں ہٹی۔ اس خاتون نے بھارتی دارالحکومت دہلی، میں بیٹھ کر مقبوضہ کشمیر کی جدوجہد آزادی کی حمایت کی ہے اور اسے بھارت کا اٹوٹ انگ ماننے سے انکار کر دیا ہے۔ اور اپنی تحریروں اور تقریروں سے بھارت کو وہ وعدے یاد دلائے ہیں، جو بھارت کے بانیوں نے سلامتی کونسل کے اجلاسوں میں کئے تھے۔

اطہر وقار

جی ہاں۔۔۔۔ یہ ارون دھتی رائے ہی ہے۔۔۔ ارون دھتی رائے، مظلوم کشمیری

ان کے بارے میں کہا جاتا ہے، کہ جب وہ فکشن لکھتی ہیں، تو حقیقی معنوں میں بھارت کی فضا کو بیان کر رہی ہوتیں ہیں۔ ارون دھتی رائے کو بیس (۲۰) سال پہلے فکشن کی دنیا کے سب سے معتبر ایوارڈ بکر (Booker) پرائز سے نوازا گیا۔ اس وقت وہ ایک غیر متنازعہ مصنفہ تھیں، اسلئے بھارتی حکومت نے اس خاتون کی تعریف میں زمیں آسمان کے قلابے ملانا شروع کر دیے۔خود ارون دھتی رائے کا ماننا تھا، جب مجھے شہرت مل گئی تو میرے سامنے راستے تھے، یا تو اسی سہولت پرستانہ، سلسلے کو آگے بڑھاتی یا پھر بھارت کے مظلوم طبقات کے ساتھ کھڑی ہوتی۔ میں نے دوسرا راستہ چنا، کیونکہ یہ حق اور انصاف کا راستہ تھا۔ اس کے بعدارون دھتی رائے پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔ انہوں نے سرمایہ دارانہ نظام، گجرات میں مسلمانوں کے بے رحمانہ قتل عام کے خلاف کھل کر لکھا۔ انہوں نے بارہا مقبوضہ کشمیرکا دورہ کیا، انہوں نے ایک کتاب (The Case for Freedom) کشمیر کے حوالے سے اور کافی مضامین بھی لکھے۔ ارون دھتی رائے، ملوم کمیری
جون ۲۰۱۷ میں ارون دھتی رائے کا دوسرا ناول منظر عام پر آیا۔ جس کا عنوان “The Ministry of Utmost Happiness” تھا۔ اس ناول میں بھارت میں انتہائی گہرائی میں کھبے ذات پات کے مکروہ نظام کو بے نقاب کیا گیا تھا، اس کے ساتھ ساتھ یہ بھی بتایاگیا کہ کس طرح صرف مردہ گائے کو، ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جانے کے جرم میں مسلمانوں کو آج بھی ذبح کر دیا جاتا ہے۔ ارون دھتی رائے نے کھل کر کہتی ہیں، کہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کو محض تحقیقی مقالوں اور رپورٹس کے ذرئیعے سے واضح نہیں کیاجا سکتا، کیونکہ جگہ جگہ بھارتی چیک پوسٹوں پر جس غیر انسانی انداز میں کشمیری مسلمانوں کی تذلیل کی جاتی ہے، اسے فکش کے ذریعے ہی بیان کیا جا سکتا ہے، مذکورہ بالا ناول میں بھی انہوں نے یہی کوشش کی ہے، اس میں ایک بلیک کشمیری ڈکشنری کا بھی ذکر ہے،کہ اگر کشمیریوں کو انگلش ڈکشنری بنانی پڑے، تو وہ A فار ایپل اور B فار بال سے کس قدر مختلف ہو گی، کیونکہ ٰان کے ذہنوں پر بھارتی جیلوں، عقوبت خانوں اور تفتشیی مراکز، کے مظالم نقش ہو چکے ہیں۔۔۔ٰٰ ارون دھتی رائے، مظلوم کشمیری

آئیں اس خوفناک بلیک ڈکشنری پر نظر ڈالتے ہیں: ارون دھتی رائے، مظلوم کشمیری

Kashmiri- English Black Dictionary

A: Azadi/army/America/Allah/Attack/AK-47/Ammunition/Ambush/Aatankwadi/
Armed Forces Special Power Act/ Area Domination/Al Badr/Al Mansoorian/Al Jehad/Afghan/Amarnath Yatra

B: BSF/body/bullet/battlion/barbed wire/brust(burst)/boder cross/booby trap/bunker/byte/begaar(forced labour)

C: Cross border/Crossfire/Camp/civilian/curfew/Crackdown/Cordon and Search/CRPF/Check post/counter-intelligence/Catch and kill/Cuscertina wire/Collaborator

D: Disappeared/Defence Spokesman/Double Cross/Double agent/Disturbed Area Act/Dead Body

E: Encounter/EJK(extrajudicial Killing)/Exgratia/Embedded journalists/elections/Enforced Disappearance.

F: Funneral/Fidayeen/Foreign Militant/FIR(First Information Report)/Fake Encounter

G: Grenade Blast/Gunbattle/G Branch (general branch -BSF intelligence)/Graveyard/Gun Culture

H: HM(Hizb-ul-Mujahideen)/HRV(human rights Violations)/HRA(human rights activist)/Hartal/Harkat-ul-Mujahideen/Honeymoon/Half-widows/Half-orphans/ Human shields/Healing Touch/Hideout

I: interrogation/India/Intelligence/Insurgent/Informer/I-card/ISI/intercepts/Ikwan/Information warfare/IB/Indefinite Curfew.

J: jail/Jamaat/JKP/JIC(Joint Interrogation Centre)/JKLF(Jammu & Kashmir Libration Front) /jihad/jannat/jahannum/Jamiat ul Mujahideen/Jaish-e-Mohammed.

K: Kills/Kashmir/Kashmiriyat/Kalashnikov/Kilo Force/Kafir,

L: Lashkar-e-Taiba/LMG/Launcher/Love Letter/Lahore/Landmine,

M: Mujahideen/Military/Mintree/Media/Mines/MPV(mine proof vehicle)/Militant/Muslim Mujahideen/Mistaken Identity/Martyrs/Muskaan(army orphanage)/Massacre/Mout/Moj

N:NGO/New Delhi/Nizam-e-Mustapha/Nabat(Ikhwan)/Night Patrolling/NTR(Nothing To Report)/nail parade/normalcy.

O: Occupation/Ops/OGW(overground worker)/overground/official version/Operation Tiger/Operation Sadbhavana.

P: Pakistan/PSA(Public Security Act)/POTA(Prevention of Terrorism Act)/Picked Up/Prima Facie/Peace/Police/Psyop(psychological warfare)/Pandits/Press Conference/Peace Process/Paramilitary/PTSD(Post-Traumatic Stress Disorder)/Paar/Press release

Q: Quran/Questioning

R:RR(Rashtriya Rifles)/Regular Army/rape/rigging/Road Opening Patrol/RDX/RAW/Renegrades/RPG(rocket propelled grenade)/razer wire/referendum

S: Separatists/Surveillance/Spy/SOG/STF/Suspected/Shaheed/shohadda(martyrs)/Sources
Security/Sadhavana(Goodwill)/Surrender(aka cylinder)/SRO (Special Relief Order Lakh)

T: Third Degree/ Torture/Terrorist/tip-off/tourism/TADA(Terrorist and Disruptive Activities Act)/threats/target/task force.

U: violence/Victor Force/Village Defence Commuttee/Version(local/official/police/army/victory

W: Warnings/wireless/waza/wazaan

X: X gratia

Y: yatra(Amarnath)

Z: Zulm(oppression)/Zplus Security.

نہایت افسوس سے کہنا پڑتا ہے، بھارتی مظالم ابھی جاری ہیں اور اسلئے یہ ڈکشنری بھی مکمل نہیں ہوئی ہے اور ہر   گزرتے دن کے ساتھ، ہرنئے ظلم کے ساتھ، اس میں نئے الفاظ کی شمولیت کا سلسلہ جاری ہے۔ ارون دھتی رائے، مظلوم کشمیری

Leave a Reply

Leave A Reply

%d bloggers like this: