Viking Age وائیکنگ ایج: مدثر ظفر

0
  • 288
    Shares

700 سے 1100 عیسوی تک کے عرصہ کو وائیکنگ ایج Viking Age کہا جاتا ہے۔Viking پرانی نارویجین زبان کا لفظ ہے جس کے معنی فاتحین کا تاج یا سہرا کے ہیں۔یہ لوگ Norse (ناروے کی پرانی زبان) بولتے تھے۔ Viking انگلینڈ کے مشرق میں ان علاقوں میں آباد تھے جنہیں ہم آج Scandinavian Countries کے نام سے جانتے ہیں۔بنیادی طور پریہ محنت کش لوگ تھے جن کا زیادہ تر انحصار کھیتی باڑی اور مال مویشی پالنے پر تھا۔ لیکن آثار سے پتہ چلتا ہے کہ Vikings بہت سخت جان اور جنگجوبھی تھے۔وقت گزرنے اور آبادی بڑھنے کے ساتھ ساتھ کم ہوتے وسائل کے سبب یہ لوگ کاشتکاری کے لیے نئی اور بہتر ذرخیز زمین کی تلاش میں تھے۔نیز انہوں نے سن رکھا تھا کہ مغرب کی طرف بھی زمین ہے جو زیادہ ذرخیز اور خزانوں سے مالا مال ہے۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ Vikings سونے کی دھات سے واقف نہ تھے۔یہ بس سلور اور لوہے کی دھاتوں سے ہی آشنا تھے۔ان کی بیشتر اشیاء جن میں ہتھیار، برتن، سکے، زیورات اور عبادت میں استعمال ہونے والی اشیاء چاندی سے بنی ہو ئی تھیں۔لباس بنانے کے لیے چمڑے اور اون کا استعمال کرتے تھے۔ ہتھیاروں میں تلوار کی بجائے کلہاڑی اور چاقو ہوتا تھا۔ یہ لوگ لڑائی کے وقت مخالف کو سر میں کلہاڑی کھینچ مارتے تھے۔ انہیں نشانہ پر کلہاڑی مارنے کا ملکہ حاصل تھا۔ Viking کے آثار پہلی بار ڈنمارک میں 1930میں دریافت ہوئے۔ ملنے والے آثاراور مخطوطوں سے معلوم ہو تاہےکہ Vikings غیر معمولی صلاحیتوں کے مالک تھے۔ یہ لوگ کشتیاں اور بڑے بحری جہاز بنانے میں ماہر تھےجو آگے پیچھے حتی کہ برف سے ڈھکے سمندر میں بھی تیر سکتے تھے۔ انہوں نے سمندر میں سمت معلوم کرنے کا آلہ بھی دریافت کرلیا تھا، جس کی مدد سے انہوں نے انگلیڈ کی جانب یورشوں کے لیے سمندر میں کامیاب سفر کیے۔

عقائد کے لحاظ سے یہ بت پرست لوگ تھے جو ایک دیوتا Odin اوڈن کی پرستش کیا کرتے تھے۔ Odin کےمعنی ہیں جنگ اور موت کا دیوتا، جو دوسرے تمام دیوتاؤں کا باپ ہے، جس کے پاس جادوئی طاقتیں ہیں۔ وائیکنگ غیر مذاہب بالخصوص عیسائیوں سے بہت زیادہ نفرت رکھتے تھے ان کا نشانہ سب سے زیادہ عیسائی ہی بنے۔ آفات سے بچنےاور فصل کی پیداوار میں اضافہ کے لیے جانوروں اور انسانوں کی قربانی بھی کیا کرتےتھے۔ نیز ان کا عقیدہ تھا کہ Odin دیوتاانسانی شکل میں کسی انسان پر ظاہر ہو سکتا ہے۔

جون 793 عیسوی میں Vikings نے پہلا حملہ انگلیڈ کے جنوب مشرقی علاقے Lindisfarne (لنڈس فارن)میں موجودچرچ پر کیا۔ (عام رعایا غریب تھے جبکہ اس دور میں چرچ بہت امیر ہوا کرتے تھے، ان میں زر جواہرات کے انبار لگے ہوتے تھے۔) عبادت گا ہ اور اس کے ارد گرد موجود گھروں میں موجود تمام مال و اسباب لوٹ لیا اوروہاں موجود تما م کے تمام عبادت گزار مردوں عورتوں بچوں بوڑھوں سب کو بلاتخصیص قتل کر دیا۔ یہVikings کا پہلا حملہ تھا لیکن یہ آغاز تھا اس تباہی کا جو اگلی تین صدیاں انگلینڈ فرانس و دیگر پڑوسی ممالک کا مقدر بننے والی تھی۔

Vikings نے 1200 تک تمام اہم یورپی ممالک پر قبضہ کر لیا تھا۔ مڈل ایسٹ سے افریقہ، افریقہ سے نارتھ ا مریکہ کو زیر نگیں کیا اور یہ پہلے یورپین تھے جنہوں نے اس قدر فتوحات حاصل کیں۔مخطوطوں سے معلوم ہوتا ہے کہ انہوں نے روم تک یورشیں کیں اسے لوٹا اور تاخت و تاراج کیا۔ ان کا دور محض تین صدیوں تک محدود رہا،چناچہ یہ بات پریشان کن ہے کہ اس قدر وسیع فتوحات اوریورپین کلچر پر گہرے نشان مرتب کرنے کے بعد بہت جلد وائیکنگ ختم کیوں ہوگئے۔؟تاریخ میں ان کا اس طرح ذکر کیوں نہیں ملتا جو ان کا حق ہے۔؟۔اس کی چند ایک توجیہات یہ پیش کی جاتی ہیں کہ مفتوحہ عیسائی علاقوں میں آباد ہونے والے Vikings نے عیسائی تعلیمات سے متاثر ہوکر عیسائی مذہب اپنا لیا۔دوسری وجہ یہ بیان کی جاتی ہے کہ مفتوحہ علاقوں میں حق ملکیت جتانے میں یہ لوگ آپس میں ہی کٹ مرے اورختم ہوگئے،جو باقی بچے انہوں نے عیسائیت اختیار کرلی۔ایک مفروضہ یہ بھی ہے کہ ایک وائیکنگ جنگجو رولو Rollo نے فرانس فتح کرنے کے بعد عیسائیت اختیار کر لی تھی اسے وہاں اعلی حکومتی منسب عطاء ہوا اور اس نے باقی وائیکنگ کو وہاں پھیلنے سے روک دیا۔
انہوں نے یورپین سے کئی صدیاں پہلے اٹلانٹک کو پار کر لیا تھا۔ ایک خیال یہ بھی ہےکہ Vikings نے کولمبس سے کئی صدیاں پہلے امریکہ دریافت کر لیاتھا۔گرین لینڈ کی دریافت کا سہرا بھی وائیکنگ کے سر ہے۔لیکن بد قسمتی سے ہم وائیکنگ کے بارے بہت کم جانتے ہیں۔

ہسٹری ٹیلی ویزن نے Viking کے نام سے ایک ٹی وی سیریز شروع کی جس کے چار سیزن آچکے ہیں۔ Michael Hirst اس کے رائٹر ہیں IMDb پر اس کی ریٹنگ 8۔6/10 ہے ناروے میں فلمائے جانے والے اس ٹی وی سیریل کے مناظر دل کش ہیں جو دیکھنے والوں کو اپنے سحر میں جکڑ لیتے ہیں۔ اس بات اندازہ سریز کے بعد سے ناروے کی سیاحت میں ہونے والے قابل قدر اضافہ سے لگایا جا سکتاہے۔ کسی فکشن سے تاریخی سیریز کا موازنہ تاریخ سے زیادتی ہوگی لیکن ناظرین کی دلچسپی کو برقرار رکھنے کے لیے مفروضات اور دیو مالائی افسانہ نگاری کا سہارا لیا گیا ہے، اس کے باوجود وائیکنگ کی تاریخ کو سمجھنے کے لیے تاریخ کے طالب علموں کے لیے Viking TV serial ایک اچھا انتخاب ہو گی۔

Leave a Reply

Leave A Reply

%d bloggers like this: