محبت کے خواب —— عدیز احمد

0
  • 14
    Shares

خواب دیکھا کرو.خواب بہت ضروری ہے.خواب حقیقت کی تلخ دھوپ میں چھاؤں جیسے ہوتے ہیں. خواب آرزو کا نام ہے. خواب امید جگاتے ہیں. امید کی لگن انسان کو ہارنے نہیں دیتی. خواب کا سفر انسان کوتازہ دم کر دیتا ہے. خواب کی خوب صورتی بندے کو سر تا پیر بدل دیتی ہے.

ایسا ہی خواب میں نے بھی دیکھا، محبت کے حوالے سے ، ارے ارے رکیئے،. یہ وہ محبت نہیں ہے. جو آج کل بدنام ہے. میں نے ایک خواب میں محبت سے ملاقات کی ہے. اسے محسوس کیا ہے. پھر میں نے اس محبت کے امر ہونے کا خواب دیکھا. اس محبت کے جاوداں ہونے کا خواب دیکھا….

اسی محبت کے احساس کوامجد اسلام امجد نے اتنی خوب صورتی کے ساتھ بتایا ہے

محبت خواب کی صورت
نگاہوں میں اترتی ہیں کسی مہتاب کی صورت
ستارے آرزو کے کچھ اسطرح جگمگاتے ہیں
کے پہچانی نہیں جاتی دلِ بیتاب کی صورت
محبت کے شجر پر خواب کے پنچھی اترتےہیں تو شاخیں جاگ اٹھتی ہیں
تھکے ہارے ستارے جب زمیں سے بات کرتے ہیں
تو کب کی منتظر آنکھوں میں
شمعیں جاگ اٹھتی ہیں
محبت ان میں جلتی چراغ آب کی صورت
محبت خواب کی صورت
محبت خواب کی صورت

لوگ کہتے ہیں خواب مت دیکھا کرو. محبت کے خواب تو تھکا مارتے ہیں. لوگ کہتے ہیں محبت گھلا دیتی ہے میں کہتا ہوں ایسا ہی ہے ۔ جب کوئی اپنی جان سے بھی زیادہ عزیز ہو جائے جس کے اداس اور خوش ہونے سے ہم بھی اداس اور خوش ہونے لگیں . جس کے منہ سے نکلی بات پورا کرنے کو دل چاہے ۔ جس کی تکلیف پر دل تڑپ جائے اور یقین جانئے، جہاں سچی محبت ہو وہا ں بدلے کی تمنا نہیں رہتی کہ ہم نے جتنا چاہا ہے، اتنا ہی ہمیں چاہا جائے یا اسی طرح سراہا جائے اور وہی محبت امر ہوتی ہے جہاں بس جب دل دے دیا جائے تو بدلہ کی چاہ ہو نہ تمنا ۔ ایسی محبت کا ہی تو خواب دیکھا میں نے۔

مگر خواب دیکھتے ہوئے یہ سوچا ہی کب جاتا ہے وہ پورا بھی ہوتا ہے یا نہیں بس ایک لگن ایک دھن لگ جاتی ہے۔ شب وروز اس خواب کو پورا کرنے کے بارے میں سوچا جاتا ہے اس کے لیے کام کیا جاتا ہے۔

محبت کا خواب ہی انسان کو ایسے بدل دیتا ہے. محبت ایک خواب کی طرح سے بندے کو خواب آسا بنا دیتی ہے. محبت کی خوشبو سے اندر باہر سب مہک جاتا ہے.

ایک حسن ایک سوز سا دل میں جاگ جاتا ہے. جانتے ہیں کیسے؟ ہر مجبور کی بے کسی کا خیال دل کو نرم کر دیتا ہے. دستر خوان کے بچے کھچے ٹکڑوں کو چڑیوں کے لئے ڈالنا سکھا دیتا ہے. گرمی کی شدت سے بے حال پرندوں کے لئے پانی رکھنا سکھا دیتا ہے پھر معذور، مسکین کے لئے تڑپنا سکھا دیتا ہے. اور یوں محبت انسان کو محبت کرنے والا بنا دیتی ہے.

آس پاس رہنے والے لوگ تک جان لیتے ہیں یہ فرد کسی دھن کسی شوق کسی لگن میں ہے ۔ جیسے کسی فرد کو کسی کی محبت نے اسیر کر لیا ۔ ۔ ۔ ساتھ کی خواہش بھی ہے اور بے جا بھی نہیں ہے ۔ ۔ اب اس خواب کو پورا کرنے کے لیے انسان اپنے آپ کو گھلا کر رکھ دیتا ہے ۔

جان تم پہ نثار کرتا ہوں
نہیں جانتا وفا کیا ہے

مگر یہ وہاں ہوتا ہے جہاں سچی محبت ہو سچی لگن ہو اور یقین جانیے اس محبت میں اپنی خوشی سے زیادہ محبوب کی خوشی دیکھی جاتی ہے ۔ جس میں محبوب راضی اس میں ہم راضی ۔ یہی ہار بندے کو جینا سکھادیتی ہے…. ایک انسان کسی کی مرضی اور خوشی کے لئے جینا سیکھ جاتا ہے تو یہی رضا اسے یہی محبت اسے رب سے ملادیتی ہے.

میں نے بھی ایک خواب دیکھا، محبت کا خواب دیکھا. اور اب اسی محبت کے خوابوں میں جینا ہے.

About Author

Leave a Reply

Leave A Reply

%d bloggers like this: