ہدایات برائے تحریر

‎دانش ایک پلیٹ فارم ہے جو مثبت تعمیری فکر کے ذریعے انسان کی عظمت، مسرت ، بندگی اور فلاح کے لیے فکری، علمی و ادبی کاوشوں کا خیر مقدم کرتاہے۔

دانش کا مقصدمذہب، ادب، تاریخ، فلسفہ اور عمرانیات کے ساتھ ساتھ عہدِحاضر کے جدید سائنسی اورمیکانکی موضوعات قارئین کے سامنے رکھنا ہے نیز مختلف مکتبہ ہائے فکر کے لکھاریوں، ادیبوں اور مفکرین کو اُن کے شایانِ شان موقع فراہم کرنا ہے کہ وہ
احسن انداز میں اپنی فکر کا ابلاغ کرسکیں۔
ادارہ ‘دانش’ کا ایک مقصد نئے لکھنے والوں کو لکھنے اور تربیت کے مواقع فراہم کرنا ہے۔
ادارہ جمالیات اور فنون لطیفہ کو بھی متناسب جگہ دے گا تاکہ ملکی ثقافت کی ترویج ہوسکے۔

‘دانش’ کے لیے تحریر بھیجنے والے حضرات درج ذیل امور مد نظر رکھیں ۔

‎۱۔ ‎تحریر کی زبان شائستہ ہو۔ ایسا کوئی آرٹیکل شائع نہیں کیا جائے گا جس میں ناشائستہ الفاظ کا استعمال اور غیر سنجیدہ طرزِاستدلال کیا گیا ہو۔ رموزِاوقاف کا درست استعمال کیا جائے۔
۲۔ تحریر اشتعال انگیز اور نفرت پر مبنی نہ ہو۔ ایسی کوئی تحریر شائع نہیں کی جائے گی جس سے کسی مخصوص طبقہ کے جذبات مجروح ہوں۔ ذات پات فرقہ یا مذہب پر تنقید کی آڑ میں حملے کی اجازت نہیں ہے۔

۳۔ سرقہ کی شدت سے حوصلہ شکنی کی جائے گی اور مواد چوری شدہ ثابت ہونے کی صورت میں لکھاری پر پابندی لگا دی جائے گی ۔
۴۔ ‎عام لطیفے ، سنسنی خیز واقعات، غیر منطقی معلومات ، غیر ضروری طور پر جذباتی تحریریں اور بچوں کا ادب ، جیسی تحریریں شائع نہیں کی جائیں گی۔
۵۔ ایسی تحریرجِس میں کسی شخصیت یا مذہبی نظریہ کو تضحیک کا نشانہ بنایا گیا ہو، شائع نہیں ہوگی، البتہ سیاسی جماعتوں بشمول حکومت کی پالیسی پر جائز تنقید اس حد میں نہیں آتی۔
۶۔ ‎اگر تحریر میں کوئی بات حوالہ طلب ہے تو اسے مکمل تفصیلات سے بیان کرنا لازم ہے ۔
۷۔ ادارہ اظہارِرائے کی آزادی کو محترم سمجھتا ہے، دانش پر شائع ہونے والی تحریروں سے ادارہ کا متفق ہونا ضروری نہیں۔
۸۔ ‎تمام شرائط پوری ہونے کے باوجود ادارہ کسی بھی مضمون کو شائع کرنے یا نہ کرنے کا صوابدیدی اختیار رکھتا ہے نیز ادارہ صاحب تحریر کو وجہ عدم اشاعت بتانے کا پابند نہ ہے ۔
۹۔ ادارہ علمی تربیت کے ضمن میں آگاہی پیدا کرنے والی تحریروں کی حوصلہ افزائی کرے گا تا کہ معاشرے میں موجود مسائل کا مذہبی اور اخلاقی اصول و ضوابط کی روشنی میں تجویز کیا جا سکے نیز قانون سازی کے لیے سفارشات کی جاسکیں۔
۱۰۔ ‎دانش پر شائع ہونے والی تمام تحریریں تحریر کنندگان اور دانش کی اجتماعی ملکیت ہیں۔ ہر دو کی اجازت کے بغیر انکو کہیں اور شائع نہیں کیا جا سکتا ، ایسا کرنے کی صورت میں دانش کے قانونی مشیر اشاعت کنندہ کے خلاف کارروای کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔

 

Mail your write ups at: writer@daanish.pk